کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان میں آج 70 واں یوم آزادی انتہائی جوش و خروش سے منایا جا رہا ہے اور پورا پاکستان سبز ہلالی رنگ میں ڈوبا ہوا ہے۔ ایسے میں پاکستان انٹرنیشنل ائیرلائنز نے بھی مسافروں کو خوشگوار حیرت میں مبتلا کرنے کا فیصلہ کیا اور ایسا سرپرائز دیدیا جو ان کے وہم و گمان میں بھی نہ تھا۔

ایک صارف نے فیس بک پر اپنے پیغام میں چند تصاویر اور ویڈیوز اپ لوڈ کرتے ہوئے لکھا ”میری کراچی سے اسلام آباد کی فلائٹ تھی جس کا وقت 4 بجے تھا مگر 5 بجے تک لیٹ ہو گئی۔ حسب معمول پی آئی اے کو کوسنا شروع کر دیا اور جیسے ہی ہم جہاز میں سوار ہوئے تو ایک اعلان سنا کہ” جیوے پاکستان خصوصی فلائٹ میں خوش آمدید۔۔۔!
اس کے بعد پاکستانی پرچم مسافروں میں تقسیم کئے گئے اور پاکستانی پرچم کی شکل کے بنے کیک بھی دئیے گئے۔ اور پھر اس کے بعد ہم نے انوشے اشرف، مومنہ مستحسن، دانیا ظفر کو ملی نغمہ گاتے اور مسافروں کیساتھ جشن آزادی مناتے دیکھا۔“
مسافر پی آئی اے کے اس سرپرائز سے اتنا خوش ہوئی کہ اس نے شکریہ ادا کرتے ہوئے مزید لکھا ”اتنی زبردست میزبانی کیلئے بہت بہت شکریہ پی آئی اے۔ میں بہت خوش ہوں کہ آپ نے یہ سب کچھ کیا۔ جب مسافروں نے دل دل پاکستان گانا شروع کیا تو میری آنکھیں آنسوﺅں سے بھر گئیں۔ یہ میرا اب تک کا سب سے بہترین جشن آزادی ہے اور اب تک کی سب سے زبردست فلائٹ بھی۔“

پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائنز (پی آئی اے) نے بھی اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر چند ویڈیوز اور تصاویر جاری کیں اور انکشاف کیا کہ یہ سرپرائز شو پرواز کے دوران بھی جاری رہا اور مومنہ مستحسن نے 37 ہزار فٹ کی بلندی پر اپنی مدھر اور سریلی آواز سے مسافروں کو جھومنے پر مجبور کر دیا۔

پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائنز (پی آئی اے) نے بھی اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر چند ویڈیوز اور تصاویر جاری کیں اور انکشاف کیا کہ یہ سرپرائز شو پرواز کے دوران بھی جاری رہا اور مومنہ مستحسن نے 37 ہزار فٹ کی بلندی پر اپنی مدھر اور سریلی آواز سے مسافروں کو جھومنے پر مجبور کر دیا۔

پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائنز (پی آئی اے) نے بھی اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر چند ویڈیوز اور تصاویر جاری کیں اور انکشاف کیا کہ یہ سرپرائز شو پرواز کے دوران بھی جاری رہا اور مومنہ مستحسن نے 37 ہزار فٹ کی بلندی پر اپنی مدھر اور سریلی آواز سے مسافروں کو جھومنے پر مجبور کر دیا۔

PIA celebrated 70 yrs of PK , 13/08/2017, hosting 1st ever “In-Flight Jam” with Momina Mustehsan, a surprise for its passengers on PK 308!